اردو جواب پر خوش آمدید

+1 ووٹ
161 مناظر
نے پوچھا اردوجوابمیں

 

جیسا کہ آپ جانتے ہیں کہ ہمارے ہاں اکثر یہ دیکھا گیا ہے کہ شادی کے بعد بھی بچے والدین کے ساتھ ایک ہی گھر میں رہتے ہیں ۔ایک ہی گھر میں کئی فیمیلز آباد ہوتی ہے۔
یہ طرز عمل ٹھیک ہے یا شادی کے بعد والدین سے الگ ہو جانا صحیح ہے۔

4 جوابات

0 ووٹس
نے جواب دیا
why not..........
0 ووٹس
نے جواب دیا
میں پہلے والے دونوں جوابات سے متفق ہوں-
+2 ووٹس
نے جواب دیا
علیحدہ رہنا زیادہ اچھا ہوتا ہے لیکن والدین سے دور نہیں اور ان کی حقوق کا خیال بھی دل سے نہ نکلے۔
+3 ووٹس
نے جواب دیا
ہر ایک کی اپنی اپنی رائے ہوتی ہے۔۔۔۔
لیکن میرے خیال سے ساتھ رہنا زیادہ اچھا ہوتا ہے۔۔لیکن وہ بھی گھر کے ماحول پر انحصار کرتا ہے۔۔اگر گھر کا ماحول بہتر ہے تو جوائنٹ فیملی سے زیادہ کچھ بھی بہتر نہیں۔ماحول اچھا ہو تو جوائنٹ فیملی میں بچوں کی تربیت اچھے طریقے سے ہو سکتی ہے کیونکہ بڑوں کو زندگی کا تجربہ ہوتا ہے، اور بڑوں سے گھر میں برکت بھی ہوتی ہے۔۔! البتہ جب بچے بڑے ہو جائیں تو الگ ہو جانا ہی بہتر ہے۔۔۔
(چونکہ میں غیر شادی شدہ اور ناتجربہ کار ہوں اسی لئے ایسا سوچتا ہوں شاید حقیقت اس سے برعکس ہو)
(1.9k پوائنٹس) نے تبصرہ کیا
حیرت ہے کہ غیر شادی شدہ اور ناتجربے کار ہونے کے باوجود اتنا بہترین اور حقیقت بر مبنی جواب دیا ماشاءاللہ ۔
ویسے امید ہے کہ یہ جواب دینے والے بھائی کی اب تک شادی ہوگئی ہوگی ۔ تو ان مثبت خیالات میں مزید پختگی اور نکھار آگیا ہوگا۔
اللہ آپ کو شاد و آباد رکھے آمین۔

السلام علیکم،

ارود جواب پرخوش آمدید۔

ہم آپ کو مطلع کرنا چاہتے ہیں کہ اردو جواب کو Q2A کے تازہ ترین ورژن 1.8پر اپ گریڈ کر دیا گیا ہے اور اس کے ساتھ تھیم میں بھی ضروری تبدیلیاں کی گئی ہیں۔

اگر سائٹ کے استعمال میں کہیں بھی دشواری کا سامنا ہو تودرپیش مسائل سے ہمیں ضرور آگاہ کیجیئے تاکہ ان کو حل کیا جا سکے۔

شکریہ



Pak Urdu Installer

ہمارے نئے اراکین

531 سوالات

674 جوابات

523 تبصرے

3.3k اراکین

...